٢٢ دسمبر ٢٠٢٣

تحریر : اعتزاز ابراہیم

لاہور


 

اسلام  آباد  پولیس کی طرف سے تربت سے اسلام آباد آنے واے لانگ مارچ پر کریک ڈاون اور گرفتاریوں کے خلاف لاہور کے لبرٹٰی چوک پر بلوچ یکجیتی کیمٹی کی طرف سے احتجاج کیا گیا ۔

احتجاج میں لاہور کے بلوچ کیمونٹی اور سول سوسائٹٰی کی بڑٰی تعداد نے شرکت کی۔مظاہرین نے اسلام ٓباد پولیس کے کریک ڈاون اور گرفتاریوں کی مذمت کرتے ہوئے شدید نعرے بازی کی۔

احتجاجی مظاہرے کے دوران پولیس کی طرف سے بار بار مظاہرہ کو روکنے کی کوشش کی گئ اور منتظمین پر جلد مظاہرہ ختم کرنے کا دباو ڈالا جاتا رہا۔

پولیس کے بار بار روکنے پر بلوچ مظاہرین نے غم و غصے کا اظہار کیا اور کہا کہ اسلام طرح پنجاب پولیس بھی ہمارے ساتھ وہی رویہ اختیار کر رہی ہے ۔

اے ایس پی شہر بانو نے وائس پی سے بات کرتے ہوئے کہا کہ لبرٹی نو پروٹسٹ زون ہے اور احتجاج کے لیے این او سی نہیں لیا گیا۔

مظاہرے کے شرکا نے اسلام آباد پولیس کی طرف کی جانے والی گرفتاریوں کی مذمت کی اور تم مظاہرین کو فوری طور پر رہا کرنے کا مطالبہ کیا۔

یاد رہے کہ بلوچ یکجتی کیمٹی نے بالاچ مولا بخش کے ماورائے عدالت قتل اور جبری گمشدگیوں کے خلاف

تربت سے اسلام آباد کی طرف لانگ بارچ کیا اور بدھ اور جمعرات کی درمیانی شب لانگ مارچ کو اسلام آباد پریس کلن جانے سے رکنے کے لئے آپریشن کیا گیا جس میں ۲۰۰ سے زائد مظاہرین کو گرفتار کیا گیا۔

دوسری طرف بدھ کی رات کو  اسلام آباد  لانگ مارچ سے   اٹھاۓ جانے والے١٦٠  بلوچ مظاہرین  جیلوں میں  منتقل کر دیے گئے  ہیں۔

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here