تحریر اعتزاز ابرہیم


لاہور

چیرمین پاکستان پیپلز پارٹی بلاول بھٹو زرداری نے سابق وزیراعظم عمران خان کو حالیہ دہشت گردی میں اضافہ کا ذمے دارقرار دیتے ہوئےان کےدور حکومت میں ٹی ٹی پی کے لوگوں کو جیلوں سے رہا کرنے اور قبائلی علاقوں میں آباد کرنے کے منصوبے کی تحقیقات کرنے کا مطالبہ کیا ہے۔
اسلام آباد میں وزارت داخلہ میں قائم کردہ ’دیوار شہدا‘ کے دورے کے بعد نگران وفاقی وزیر داخلہ سرفراز بگٹی کے ہمراہ پریس کانفرنس میں خطاب کرتے ہوئے انہوں نے ملک میں حالیہ دہشت گردی کا ذمہ دار پی ٹی آئی حکومت کو قرار دیا اور کہا کہ

جب افغانستان میں اقتدار منتقل ہو رہا تھا تو پاکستان کے عوام اور پارلیمان سے پوچھے بغیر ایک فیصلہ
سےجو دہشت گرد قیدی پاکستان میں موجود تھے، انہیں پاکستان کی جیلوں سے نکالا گیا اور عمران خان نے انہیں دوبارہ دعوت دے کر قبائلی علاقوں میں آباد کیا۔

یاد رہے سابق وزیراعظم عمران خان اپنے ایک خطاب میں اپنے دور اقتدار
میں آفغانستان میں طالبان حکومت آنے کے بعد تحریک طالبان پاکستان کے30 سے 40 ہزار لوگوں کو قبائلی علاقوں میں آباد کرنے کے منصوبے کااعتراف کر چکے ہیں۔

بلاول اکیلے نہیں، بلکے دوسرے سیاسی رہنما بھی یہ بات کر چکے ہیں -. سابق پی ڈی ایم حکومت کے وزیر داخلہ رانا ثنا اللہ بھی ایک پروگراممیں گفتگو کرتے ہوئے کہہ چکے ہیں کہ عمران حکومت میں ٹی ٹی پی کی آبادکاری کی پالیسی غلط ثابت ہوئی ہے جس کے نتیجے ہی میں حالیہ دہشت گردی میں اضافہ ہوا ہے ۔

نیشنل ڈیموکریٹک موومنٹ کے رہنما افرسیاب خٹک کا وائس پی کے سے گفتگو کرتے ہوئے کہنا تھا کہ

 پاکستان کی افغان پالیسی سیکورٹی ادارے بناتے ہیں طالبان کا پروجیکٹ سول حکومت کے ہاتھوں میں نہیں ہے اس کی پوری ذمہ داری سیکورٹی اداروں پر آتی ہے آگر تحقیقات کرنی ہیں تو سیکورٹی اداروں کی پرو طالبان پالیسیوں کی کرنی چاہیے ۔ اس پالیسی کو بدلے بغیر دہشتگردی ختم نہیں ہو سکتی ۔

چیئرمین پیپلز پارٹی نے اپنی پریس کانفرنس میں عمران خان کی حکومتمیں پاکستان کی جیلوں سے دہشت گردوں کو رہا کرنے اور تحریک طالبان  پاکستان کے لوگوں کو قبائلی علاْقوں میں آباد کرنے کی تحقیات کا مطالبہ کیا ہے۔

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here