٢٢ جنوری ٢٠٢٤

سٹاف رپورٹ


لاہور

افغانستان کے صوبے کنڑ میں تحریک طالبان پاکستان کے دہشت گردوں کی مدرسے کی دستار بندی کی تقریب میں شرکت کی ویڈیو سوشل میڈیا پر منظر عام پر آگئی ۔میڈیا رپورٹس کے مطابق تقریب کنڑ میں موجود مدارس، مدرسہ دار الحجرا والجہاد اور جامعہ منبہ الاسلام میں ہوئی ۔ تقریب میں ٹی ٹی پی کے دہشت گرد عظمت لالا اور مولوی فقیر کی موجودگی بھی دیکھی گئی۔ تقریب میں متعدد افغان رہنماؤں نے بھی شرکت کی۔

افغان طالبان حکومت متعدد باراس بات کا اظہار کر چکی ہے کہ افغانستان میں ٹی ٹی پی کے کوئی ٹھکانے موجود نہیں جبکہ تقریب کی ویڈیو افغانستان میں تحریک طالبان پاکستان کی موجودگی کا اظہار کر رہی ہے۔پاکستانی ریاست کئی جگہوں پر اس بات کا اظہار کر چکی ہے کہ ٹی ٹی پی کے افغانستان میں مخفوظ پناہ گاہیں موجود ہیں ۔اورافغانستان کی سرزمین پاکستان کے خلاف استعمال کرتی ہے جس کا افغان حکومت کو بخوبی علم ہے اور کئی اہم سطحوں پر پاکستان اس بات پر زور دے چکا ہے کہ افغان حکومت دہشت گردوں کے خلاف بھرپور کارروائی کرکے خطے کو دہشت گردی سے پاک کرے۔اور ٹی ٹی پی کی افغان سرزمین سے پاکستان کے خلاف دہشت گرد کارروائیوں کی بنیادی وجہ افغان طالبان کا ٹی ٹی پی کو محفوظ پناہ گاہیں مہیا کرنا ہے ۔

دہشت گردی کے خلاف جنگ میں پاکستان کی ریاست کا اہم کردار رہا ہے ۔ اس جنگ کے دوران پاکستان کی ریاست دہشت گردی کا سب سے بڑا نشانہ رہی ہے ۔اس جنگ کے دوران ۷۰ ہزار سے زائد پاکستانی شہید اور پاکستانی معشیت ۱۵۰ ارب ڈالرز کا نقصان اٹھا چکی ہے ۔ تحریک طالبان پاکستان کئی دہشت گردی کی بڑی کاروائی کر چکی ہے اور اس کی زمہ دار قبول کر چکی ہے ۔ ۱۶ دسمبر ۲۰۱۴ پشاور میں واقع آرمی پبلک اسکول (اے پی ایس)پرہونے والے حملے کی ذمہ داری بھی تحریک طالبان پاکستان (ٹی ٹی پی) نے قبول کی جس میں طلبہ سمیت 140 سے زائد افراد کو شہید کیا گیا۔
تحریک طالبان پاکستان (ٹی ٹی پی) پاکستان ایک لالعدم دہشت گرد تنظیم ہے جو 2007 میں تشکیل دی گئی تھی۔ ٹی ٹی پی کا مقصد پاکستان میں طاقت کے زور پر شرعی قانون قائم کرنا ہے۔تحریک طالبان پاکستان کے راہنماوں نے افغان طالبان کے ہاتھ پر بیعت کی ہوئی ہے اور ٹی ٹی پی کے حوالے سے تاثر پایا جاتا ہے کہ انہیں افغان طالبان اور افغان حکومت کی سپورٹ حاصل ہے جس کی مدد سے پاکستان میں دہشت گردی کی کارائیاں کرتے ہیں۔

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here