١٣ فروری ٢٠٢٤

سٹاف رپورٹ


لاہور

نیشنل ڈیموکریٹک مومنٹ کے چیئرمین محسن داوڑ پر سیکیورٹی فورسز کی طرف سے فائرنگ کے خلاف آج شمالی وزیرستان میں شدید احتجاج۔این ڈی ایم کے کارکنانوں کی طرف سے بطور احتجاج شمالی وزیرستان کے بازار اور مارکٹس بند کراوئے گئے۔مظاہرین کا مطالبہ تھا کہ واقع کی فوری طور پر شفاف تحقیقات کی جائے۔

شمالی وزیرستان کے ڈی ایس پی سید جلال نے محسن داوڑ اور ان کے ساتھیوں کی طرف سے سیکیورٹی فورسز پر فائرنگ کے الزمات کی تردید کی۔ ڈی ایس پی نے مظاہرین کے سامنے اقرار کیا کہ محسن داوڑ اور اُن کے ساتھیوں نے حملہ نہیں کیا اور نہ ہی سیکورٹی اہلکار شہید یا زخمی ہوئے۔انکا مزید کہنا تھا کہ وہ احتجاج کے شرکاء سے مذاکرات کر کے امن قائم کرنے کے لیے آئے ہیں۔

یاد رہے پیر کے روز شمالی وزیرستان کے علاقے میران شاہ میں این اے 40 میں مبینہ دھاندلی کے خلاف  این ڈی ایم نے آر او آفس کے سامنے احتجاج کیا۔  اور آر او آفس میں داخل ہونے کی کوشش کی جس کے جواب میں سیکورٹی فورسز نے  فائرنگ کی، جس میں محسن داوڑ زخمی اور تین افراد جاں بحق ہوئے۔

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here