۲۲ جون۲۰۲۴

سٹاف رپورٹ


لاہور

پنجاب کے ضلع خانیوال کی تحصیل کبیر والا میں بیٹے نے مبینہ طور پر ’غیرت ‘ کے نام پر ماں اور 3 بہنوں کو قتل کر دیا۔کبیروالا کے نواحی علاقہ بستی لوہاراں والی میں گزشتہ روز یہ واقع پیش آیا، جہاں عباس نامی شخص نے اندھا دھند فائرنگ کر کے اپنی والدہ اور تین بہنوں کو قتل کردیا۔ جان کی بازی ہارنے والوں میں 45 سالہ ماں حسینہ بی بی،25 سالہ ثمینہ بی بی،20 سالہ آمنہ بی بی،18 سالہ حلیمہ بی بی شامل ہیں۔

ترجمان خانیوال پولیس محمد عمران نے وائس پی کے سے گفتگو کرتے ہوئے بتایا کہ ’’ مرکزی ملزم عباس کو واقع  کے کچھ دیر بعد ہی گرفتار کر لیا گیا تھا اور ملزم نے پولیس کے سامنے اعتزافی بیان دیا کہ اسے اپنی والدہ اور بہنوں کے کردار پر شبہ تھا جس پر اس نے یہ قدم اٹھایا۔‘‘

ایف آئی آر کاپی

واقع کی ایف آئی آر پولیس کی مدعیت میں درج کی گئی ایف آئی آر کے متن کے مطابق ملزم عباس ولد ظفر اپنے دوست عثمان کے ہمراہ مسلح ہو کر اپنے گھر داخل ہوا اور اپنی بہن ثمینہ کو فائرنگ کر کہ قتل کیا اور پھر گھر کے پاس کھیت میں بھاگ کر وہاں موجود اپنی والدہ حسینہ بی بی اور بہنوں حلیمہ اور آمنہ کو فائرنگ کر کہ قتل کر کہ موقع سے فرار ہو گیا جسکو بعد میں پولیس نے گرفتار کیا ۔

 

وزیراعلیٰ پنجاب مریم نواز نے کاکبیر والا واقعے پر نوٹس لیا ۔ تفصیلات کے مطابق وزیراعلیٰ مریم نوازنے آئی جی پنجاب سے رپورٹ طلب کی اور ملزم کی فوری گرفتاری کا حکم دیا۔ وزیراعلی نے کہاکہ بیٹے کے ہاتھوں والدہ اور بہنوں کے قتل کے دلخراش واقعہ کی خبر پر انتہائی دکھ ہوا ہےکسی کو قانون ہاتھ میں لینے کی اجازت نہیں دی جاسکتی، ملزم کو قانون کے مطابق قرار واقعی سزا دلوانے میں حکومت بھرپور کردا ر ادا کرے گی۔

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here